میری دنیا // زینب نغمان

ایک چائے کے کپ کا انتظار کرتے 
ایک نئی کہانی سوچ لیتی ہوں 
یونہی چلتے چلتے ،
الفاظوں کے خزانے سے 
ایک ہیرا میں چُن لیتی ہوں
 
کھوئی رہتی ہوں اپنے ہی خیالوں میں 
الجھی ہوں انگنت سوالوں میں 
ان عادتوں کی وجہ سے 
پاگل بھی کہلاتی ہوں 
تو کچھ نئے قصّوں سے
 دل کو بہلاتی ہوں 
اس بےرنگ سی دنیا میں 
کئ پھول کھلتے ہیں 
خوابوں کے دیس میں 
بچھڑے  یار بھی ملتے ہیں 
کتابوں پر پڑی دھول
 اڑ اڑ کر رنگ بکھیرتی ہے 
اندھیری رات ٹمٹماتے تاروں کو
 اپنی جھولی میں سمیٹتی ہے 

تیز ہوایئں ایک اشارہ سا دے جاتی ہیں 
اٹھتی لہریں ہولے سے کچھ کہہ جاتی ہیں 
بارش کی ہر بوند کورے کاغذ پر 
کہیں دور کنارِ ساگر پر 
کئ افسانے لکھ جاتی ہیں 
کبھی تو پریاں بھی دِکھ جاتی ہیں 

ممکن ہے یہ سب میرے ہی جہاں میں 
تم ڑھونڈوگے یہ سب  کہاں سے 
میری آنکھیں بند کرتے ہی
 ایسے منظر چھا جاتے ہیں 
مجھے تو یہ
 اندھیرے بھی بھا جاتے ہیں 
نذرِ قلم کر دیتی ہوں 
میں یہ قصّے کہانیاں 
بڑی ہی حسین ہے 
میری یہ الفاظوں کی دنیا 

Sharing Is Caring
Recommended For You

Leave a Reply

avatar
  Subscribe  
Notify of